میرا صفحہ > کہانیاں > نیک عمل Bookmark and Share
  << پچھلی کہانی  |  اگلی کہانی >>  
Mohammad Saad ifrahim Qadri
Mohammad Saad ifrahim Qadri
College
نیک عمل
تاریخِ تخلیق Feb 21st 2010
تمام تبصرے : 7
دیکھے گئے :  1077
2 افراد اس صفحہ کو پسند کرتے ہیں!

پسند کیا

Rank 25 Out of 10
ایک دن میں گھر سے نکلا تو میں نے دیکھا کہ کچھہ لوگ برسوں سے لگے درختوں کو کاٹ رہے ہیں۔آس پاس کھڑے لوگوں سے معلوم ہوا کہ یہاں ایک فیکٹری قائم ہوگی ۔ میں نے دل میں سوچا کہ ہمیں ان فیکٹریوں کی اتنی ضرورت نہیں جتنی ان درختوں کی ہے کاش ہمیں اتنا شعور آجائے کہ ہم اچھے اور برے کو پہچان سکیں۔ گھر آتے وقت میں نے ایک نرسری سے کچھہ پودے خریدے اور کیاری میں لگا دیے اس امید کے ساتھہ کہ شاید میرا یہ نیک عمل آنے والے دور کے لیے کارآمد ثابت ہو شاید یہ نھنے پودے اس زمانے کے درختوں کی کمی کو پورا کر سکیں میری آپ سب لوگوں سے گذارش ہے کہ آپ بھی اس نیک کام میں حصہ لیجیے آپ بھی اپنے گھروں میں پودے لگایئے۔  کیوں کہ پودے ہماری زندگی کے لیے بہت موفید ہوتے ہیں۔ یہ بڑے ہو کر درخت بن جاتے ہیں اور پھر یہ درخت ہمیں پھل ،صاف ہوا اورسایہ فرہام کرتے ہیں۔ ہمیں ان پودوں اور درختوں کی حفاضت کرنی چاہیے ۔ یہ درخت بھی ہماری دولت ہیں ۔
  << پچھلی کہانی  |  اگلی کہانی >>  

تبصرے 7
محسن Nice محسن
Jan 21st 2011
 
 
محسن اب ہم بھی اپنے گھر میں پودے لگائیں گے۔ محسن
Nov 30th 2010
 
 
انس اچھی کہانی ہے. بہت خوب سعد. انس
Jun 20th 2010
 
 
احمد عالم

بہت زبردست کہانی ہے، اور اس میں بہت اچھا سبق موجود ہے.

احمد عالم
Apr 8th 2010
 
 
نادیہ افراھیم کہانی ہو تو ایسی نادیہ افراھیم
Mar 1st 2010
 
 
کامران خان کھانی پڑھ کر مزہ آیا. کامران خان
Jan 28th 2010
 
 
ساجد علی سعد بہت خوب بے حد زبردست کہانی ہے ساجد علی
Jan 25th 2010
 
 

اپنا تبصرہ بھیجیں
 
 
Close
 
 
Stories Drawings Jokes Articles Poems