میرا صفحہ > کہانیاں > جھوٹ کی سزا Bookmark and Share
  << پچھلی کہانی  |  اگلی کہانی >>  
Fahad Ahmed
Fahad Ahmed
The City Scool
جھوٹ کی سزا
تاریخِ تخلیق Jan 14th 2010
تمام تبصرے : 1
دیکھے گئے :  1083
2 افراد اس صفحہ کو پسند کرتے ہیں!

پسند کیا

Rank 25 Out of 10
ہم چار بہن بھائی ہیں۔ سلمیٰ، شمائلہ، صدف اور میں۔ ایک دن ہم سب نے سوچا کہ ایک کیک بنا کر شام کی چائے پر سب کے سامنے پیش کیا جائے۔ اس دن امی ابو گھر پر نہیں تھے۔ ہم نے موقع غنیمت جانا اور سلمیٰ باجی کو بتائے بغیر کیک کی تیاری شروع کردی۔ انڈوں اور دودھ کے علاوہ ہمارے پاس سب کچھ تھا۔ تھوڑی دیر بعد گوالا آکر دودھ دے گیا۔ ہم نے پڑوسیوں سے انڈے لیے اور کیک بنانے لگے۔
کیک تیار کرکے اسے اوون میں رکھ دیا۔شام کو جب امی ابو واپس آئے تو ہم نے کیک میز پر رکھا اور وہاں سے بھاگ آئے، سلمیٰ باجی کو بہت غصہ آیا، کیوں کہ وہ نہیں چاہتی تھیں کہ بچے کوئی ایسا کام کریں جو بڑوں کے کرنے کا ہو۔
ابو نے کیک چکھا تو ہم سب کو بلایا۔ ہم سجھے کہ شاید کیک اچھا نہیں بنا، ہم ڈرے ڈرے اور سہمے ہوئے ابو کے حضور پیش ہوئے۔ ابو نے پوچھا:
"کیک کس نے بنایا ہے"۔
ہم نے جلدی سے جھوٹ بولا: "کیک صدف نے بنایا ہے۔ یہ کہہ کر ہم تو اپنے کمرے میں چلے گئے۔ ابو نے صدف کو بلایا، پیار کیا اور پچاس روپے کا نوٹ اس کے ہاتھ میں پکڑادیا اور ہم سب منھ تکتے رہ گئے۔ کیک بہت عمدہ بنا تھا۔

  << پچھلی کہانی  |  اگلی کہانی >>  

تبصرے 1
hamna جھوٹ ھا ھا ھا Hamna
Dec 15th 2013
 
 

اپنا تبصرہ بھیجیں
 
 
Close
 
 
Stories Drawings Jokes Articles Poems