Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
تاریخ عالم > جدید دور
ہیروشیما پر...
جرمنی کی شکست
پرل ہاربر کی...
ہٹلر کا...
نہر سویز کی...
نہر پامانہ کا...
انقلاب روس
جنگ عظیم اول...
گھوڑے کے بغیر...
سمندر کی...
انقلاب فرانس
امریکا میں...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

تاریخ عالم

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   پچھلا
 

انقلاب فرانس

 
   
 
فرانس میں جس فساد کا مدت سے خطرہ تھا، وہ 14 جولائی 1789ء کو پیرس میں برپا ہوگیا۔ عوام نے بیتل کے قید خانے پر حملہ کرکے گورنر کو قتل کردیا اور قید خانے کی تاریک کوٹھڑیوں میں جو سات قیدی بند تھے، انہیں رہائی دلادی۔ دراصل عوام سامان جنگ کی تلاش میں تھے، لیکن یہ مقصد بھی ان کے پیش نظر تھا کہ اس پرانے قلعے پر قبضہ جمالیں، جو قید خانے کی صورت میں ظلم واستبداد کا ایک منحوس نشان بن گیا تھا۔ بیتل کا جبراً کھول دیا جانا عوام کے دبے ہوئے جذبات کی بارود کے لیے فتیلہ بن گیا اور اس سے دھماکوں کا وہ وسیع سلسلہ جاری ہوا جسے انقلاب فرانس کہا جاتا ہے۔
بنیادی اسباب پر نظر کی جائے تو یہ انقلاب دراصل صنعتی انقلاب کا شاخسانہ تھا۔ ترقی پذیر متوسط طبقہ سیاسی اور اقتصادی اقتدار حاصل کرنے کا خواہاں تھا۔ فرانسیسی نوابوں نے جاگیرداری کے سلسے میں جو خاص حقوق حاصل کرلیے تھے، اگرچہ وہ فرسودہ ہوچکے تھے تاہم ان کی وجہ سے کسان اور مزدور بھوکوں مررہے تھے اور محاصل کا بوجھ بھی انہی پر پڑا ہوا تھا۔ امراء رنگ رلیاں منارہے تھے اور ان کے سرکاری خزانے کو کوئی رقم نہ ملتی تھی۔ بادشاہ حد درجہ کمزور تھا۔ اس سے یہ امید ہی نہ تھی کہ وہ کسانوں اور مزدوروں کو مطمئن رکھنے کی غرض سے پرانے آئین میں مناسب ردو بدل کرے گا، لہٰذا عوام اٹھے اور انہوں نے معاملات اپنے ہاتھ میں لے لیے۔

 
Next   پچھلا

Bookmark and Share
 
 
Close