Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
تاریخ عالم > اسلامی تاریخ
بحر ظلمات میں...
انڈونیشیا کی...
قیام پاکستان
میسور کی...
قیصر کی شام...
مشرق اور مغرب...
فتح مکہ
صلح حدیبیہ
معرکہءبدر
مغلیہ سلطنت...
خشکی پر جہاز
تاتاریوں کو...
ہندوستان میں...
جامعہ ازہر کا...
الفانسو کی...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

تاریخ عالم

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

قیام پاکستان

 
   
 
قرارداد پاکستان مسلم لیگ نے 23 مارچ 1940ء کے اجلاس لاہور میں منظور کی تھی۔ اس وقت سے اسلامی سیاست  کا رخ بدلا اور مسلمانوں نے ملی جلی حکومت بنانے کا خیال ترک کرکے اپنی الگ مستقل حکومت کے لیے جدوجہد شروع کی۔
14اگست 1947ء کو انگریزی حکومت کا دور ختم ہو گیا اور متحدہ ہندوستان کی جگہ دو آزاد حکومتیں وجود میں آگئیں۔ ایک پاکسان، دوسری ہندوستان، حد بندی کے کمیشن نے 17 اگست کو اپنا فیصلہ سنایا اور کم از کم ایسی سات تحصیلیں ہندوستان کے حوالے کردیں جن میں مسلمانوں کی تعداد سب قوموں سے زیادہ تھی اور ان کی حدیں مغربی پاکستان سے ملی ہوئی تھیں۔ اس غلط فیصلے اور بعض مفسد گروہوں کی فتنہ انگیزی سے قتل و غارت کا ایک ایسا افسوس ناک دور شروع ہوگیا جس نے آزادی کی شادمانیوں کو آنسوئوں اور آہوں میں تبدیل کردیا۔ لاکھوں انسانوں کو ان کے آبائی وطن سے اٹھا کر پاکستان کی طرف دھکیل دیا گیا۔ تاکہ اس نئی حکومت کی مشکلات زیادہ سے زیادہ بڑھ جائیں، اس غم نے قائد اعظم کی صحت برباد کردی۔ تاہم جو قدم اٹھ چکا تھا، اس کا پیچھے ہٹنا غیر ممکن تھا۔ قائد اعظم کی ہمت اور عام پاکستانیوں کے صبر و استقامت سے تمام مشکلوں پر قابو پالیا گیا اور وہ جمہوری ریاست ایک روشن حقیقت بن گئی جو اس دنیا کی سب سے بڑی اسلامی حکومت ہے

 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close