Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
تاریخ عالم > درمیانی دور
شارلیمین...
برطانیہ میں...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

تاریخ عالم

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   پچھلا
 

شارلیمین رومی سلطنت کا تاج پہنتا ہے

 
   
 
شالیمین 8000ء میں رومہ پہنچا۔ بظاہر اس کی غرض یہ تھی کہ پوپ لیو سوم کے طرز عمل کی چھان بین کے لیے بشپوں کا جو کمیشن مقرر ہوا تھا، اس کے کام کا جائزہ لے، شارلیمین تین ہفتے رومہ میں ٹھہرا رہا۔ کمیشن نے لیو کو تمام الزامات سے بری قرار دیا اور شارلیمین نے اس فیصلے کی تصدیق کردی دو روز بعد اسی پوپ کے ہاتھوں شہنشاہی کا تاج اس کے سر پر رکھا گیا۔
اس کے بعد مشرقی سلطنت کے ساتھ شرطیں طے کرنے کا مسئلہ چھڑ گیا۔ شارلمین نے یہ تجویز بھی پیش کی کہ مشرقی سلطنت کی ملکی آئرین اس سے شادی کرلے اور اس طرح دونوں سلطنتیں متحد ہو جائیں مگر اس اثنا میں ملکی آئرن کو تخت سے اتار دیا گیا اور نسی فورس مشرقی سلطنت کا شاہنشاہ بن گیا۔ اب دونوں سلطنتوں کی سرحدوں کے بارے میں لڑائی چھڑ گئی۔ ایڈریاٹک میں ایک بحری جنگ بھی پیش آئی۔ آخر شارلمین کو جھکنا پڑا اور 1812ء میں دونوں سلطنتوں کی مساوی تقسیم عمل میں آگئی۔
اطالوی قبیلوں میں سے لمبارڈ پپانیت کے سب سے بڑے دشمن تھے اور وہ مشرقی شہنشاہی کے حامی سمجھے جاتے تھے۔ شارلمین شہنشاہ بننے سے پچیس رس پہلے لمبارڈوں کی قوت کو توڑ چکا تھا۔ یورپ کے بڑے حصے کا مالک بن جانے کےبعد اس سنے آخر (جرمانیہ) کو دارالحکومت بنایا۔

 
Next   پچھلا

Bookmark and Share
 
 
Close