Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
تاریخ عالم > قدیم تاریخ
بنی اسرائیل...
سکندر اعظم...
یروشلم کی...
مشرق میں نئے...
انگریزوں کی...
رومہ پر...
جولیس سیزر کا...
قرطاجنہ کا...
میراتھان کے...
کنفیوشس کی...
سائرس کا بابل...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

تاریخ عالم

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

اگلا   Back
 

انگریزوں کی فرانس کے نارمنوں سے شکست

 
   
 
اگرچہ لڑائی صرف دوپہر سے رات ہونے تک جاری رہی، تاہم یہ جنگ سخت خونریز، فیصلہ کن اور نتائج کے اعتبار سے بڑی اہم تھی۔ کوئی انگریز یا امریکی طالب علم نہ تاریخ فراموش کرسکتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 1066۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور نہ میدان جنگ۔۔۔۔۔۔۔۔ ہیسٹنگ
انگلستان کا بادشاہ ایڈورڈ 051ء میں فرانس گیا تو غالباً اس نے نارمنڈی کے ڈیوک ویم سے انگلستان کے تاج و تخت کا وعدہ کرلیا۔ 1064ء میں ولیکس کے امیر ہیرلڈ کا جہاز ساحد فرانس کے قریب تباہ ہوگیا اور اسے نارمنڈی میں اترنا پڑا۔ ولیم نے اسے قید کرلیا اور تاج کا وعدہ لیے بغیر رہا نہ کیا۔ لیکن 1066ء میں ہیرلڈ خود انگلستان کا بادشاہ بن گیا تو ولیم 28 ستمبر 1066ء کو فوج کے ساتھ ساحل انگلستان پر لنگر انداز ہوا، تاکہ جو وعدے توڑے گئے تھے انہیں بزور شمشیر پورا کرائے۔
ہیرلڈ نے جلدی میں سپاہی فراہم کیے اور حملہ آور مقابلے کے لیے اس پہاڑی پر پہنچ گیا جو قصبہ ہیسٹنگز سے تقریباً چھ میل پر ہے۔ اس کی فوج زیادہ تر پیادہ تھی۔ اگرچہ تعداد میں وہ ولیم کے آدمیوں سے یقیناً زیادہ تھی، لیکن سپاہیوں میں سےا کثر کے پاس نہ تو اچھے ہتھیار تھے اور نہ نارمنوں جیسا جنگی تجربہ تھا۔
ایک دوسرے کے بالمقابل صد بندی ہوچکی تو پہلے ولیم کے تیر اندازوں نے تیروں کا مینہ برسایا۔ پھر اس کی پیادہ فوج نے حملہ کی، ہیرلڈ کے سپاہی ڈھالیں جوڑ کر ایک مضبوط دیوار کی شکل میں جم گئے وہ لمبے دستے والے تبراس چابک دستی سے چلاتے تھے کہ ولیم کے مسلح سوار بھی ان پر غلبہ نہ پاسکے۔
اب ولیم نے ایک عجیب چال چلی۔ اس نے اپنی سپاہیوں کو پیچھے ہٹنے کا حکم دیا۔ جونہی وہ پیچھے ہٹی، ہیرلڈ کی فوج اس کے تعاقب میں آگے بڑھی اور اس طرح وہ مضبوط دیوار ٹوٹ گئی جسے ولیم کی جنگی قوت نہ توڑ سکی تھی۔ عین اس وقت ولیم کے سواروں نے پلٹ کر شدید حملہ کیا اور ہیرلڈ کی سپاہ کو سخت نقصان پہنچایا یا تھوڑی دیر کے بعد ولیم دوبارہ اسی چال پر کاربند ہوا۔ ہیرلڈ کی محافظ فوج آخری دم تک مقابلے پر جمی رہی، لیکن ولیم کے تیر اندازوں نے اس کے پرخچے اڑا دئیے، اس طرح نارمن انگلستان پر قابض ہوگئے۔ رومیوں اور ڈنیوں سے کہیں زیادہ اثر نارمنوں کی فتوحات سے پڑا، اور برطانیہ میں تہذیب و تمدن کا آغاز انہیں فرانسیسی فاتحین  کے طفیل ہوا۔

 
اگلا   Back

Bookmark and Share
 
 
Close