Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
کھیل > کھلاڑی
آندرے اگاسی
کرسٹیانو...
یو ایس اوپن...
ممبئی مراتھن...
کرسٹیانو...
یونس خان
یوسین بولٹ
امپائر علیم...
امپائر ڈیوڈ...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

کھیل

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

امپائر علیم ڈار

 
   
 
دنیائے کرکٹ کے عظیم امپائر علیم ڈار نے اپنے کیرئیر کا آغاز کرکٹ کھیل کر کیا۔ علیم ڈار اپنے دور میں اسپنر تھے۔ ان کے والد پولیس میں ملازمت کرتے تھے، چنانچہ والد کے دوسرے شہروں میں تبادلے ہونے کی وجہ سے وہ مسلسل کرکٹ نہ کھیل سکے اور کئی سال ان کے اسی وجہ سے ضائع ہوگئے۔ چنانچہ فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلنے تک ان کی عمر زیادہ ہوجانے کی بنا پر انہوں نے کرکٹ کو خیر باد کہہ دیا ور امپائرنگ کے شعبے کو اپنالیا۔ علیم ڈار وہ مایہ ناز امپائر ہیں جنہوں نے صرف ابتدائی 12 میچز میں امپائرنگ کرکے ورلڈ کپ 2003ء میں امپائرنگ کرنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔ ان کے یادگار میچز میں ورلڈ کپ 2007ء کا فائنل معرکہ شامل ہے۔ اس کے علاوہ جب برائن لارا نے 400 رنز کی اننگز کھیلی تو علیم ڈار وکٹ پر موجود تھے اس کے علاوہ مرلی دھرن نے سب سے زیادہ وکٹوں کا عالمی ریکارڈ بھی ان ہی کے سامنے توڑا جبکہ آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کے مابین سب سے زیادہ 438 رنز والے ون ڈے میچ میں بھی علیم ڈار امپائرنگ کررہے تھے۔ علم نے اپنے پورے کیرئیر میں اب تک صرف دو غلط آئوٹ دیے ہیں جن کا انہیں افسوس ہے۔ پہلا میچ انگلینڈ اور بھارت کے مابین کھیلا گیا جس میں انہوں نے سچن ٹنڈولکر کو غلط آئوٹ دے دیا تھا اور دوسرا ایشنر سیریز کا میچ تھا جس میں سائمن کیٹج نے لیگ سائیڈ پر جاتی گیند کو کھیلنے کی کوشش کی جو بیٹ سے کافی دور تھی اور انہوں نے بائولر کی اپیل پر آئوٹ دے دیا۔ عظیم پاکستانی فاسٹ باولر وقار یونس سے مشابہت رکھنےو الے سنجیدہ شخصیت کے حامل علیم ڈار اپنےو الدین کی فرمانبرداری، پانچ وقت نماز کی پابندی اور اپنے کام سے سنجیدگی کو اپنی کامیابی کا راز سمجھتے ہیں۔

 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close