Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
کھیل > کھلاڑی
آندرے اگاسی
کرسٹیانو...
یو ایس اوپن...
ممبئی مراتھن...
کرسٹیانو...
یونس خان
یوسین بولٹ
امپائر علیم...
امپائر ڈیوڈ...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

کھیل

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   پچھلا
 

یونس خان

 
   
 
سترہ سال کی بعد پاکستان کے سر پر علامی چیمپئن کا سہرا سجانے والے پاکستانی ٹیم کے کپان یونس خان نے اپنے بچپن کرکٹ، بیڈمنٹن اور ٹینس کھیل کر گزارا۔ وہ پانچویں جماعت میں تھے کہ ان کو اسٹیل مل میں جاب مل گئی اور اس وقت ان کو آٹھ سو روپے ماہانہ ملا کرتے تھے۔ کامیابی کی منازل طے کرتے ہوئے انہوں نے کافی مشکلات کا سامنا کیا۔ وہ کہتے ہیں کہ جب مجھے کرکٹ کھیلنے کے لیے اسٹیل مل سے کھوکھرا پار تک بس میں سفر کرنا پڑتا تو خراب سڑک کی وجہ سے میرا سر با ربار بس کی چھت سے ٹکرا جاتا۔ اس کوفت سے بچنے کے لیے میں بس کے پائیدار پر کھڑے ہو کر سفر کیا کرتا تھا۔ آسٹریلیا کے سابق فاسٹ بائولر گلین میک گرا کو مشکل ترین بائولر اور ویسٹ انڈیز کے برائن لارا کو اپنا پسندیدہ بلے باز گردانتے ہیں۔ شوقین مزاج نظر آنے والا یہ کھلاڑی سی فوڈز اور ہلکے کھانے پسند کرتا ہے۔ کڑاہی گوشت اور مرغن سالن شوق سے نہیں کھاتا۔ یونس خان اپنی کامیابیوں کا سہرا پنے بھائی شریف خان کے سر باندھتے ہیں اور قومی ٹیم کے کپتان کی حیثیت سے اپنی ٹیم کو 2011ء کے ورلڈ کپ میں ٹاپ تھری ٹیموں میں دیکھنے کی خواہش رکھتے ہیں۔

 
Next   پچھلا

Bookmark and Share
 
 
Close