Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
سائنسدان > مشرقی دور
الادریسی
البیرونی
بو علی سینا
ابن الہیشم
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

سائنسدان

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   پچھلا
 

ابن الہیشم

 
   
 
ابو علی الحسن ابن الحسن ابن الہیشم940ءمیں پیدا ہوئے جو یورپ میں ال ہیزن(Alhezan) کے نام سے مشہور ہیں۔ بصرہ کی سرزمین پر جنم لینے والا ابن الہیشم اپنے دور کا مشہور سائسن دان، ماہر فلکیات، ریاضی دان اور طبیب رہا ہے۔ آپ ہی وہ عظیم سائنس دان ہیں جنہوں نے علم ہیت اور علم نورپر بنیادی سائنسی تحقیقات پیس کیں۔ اس لحاظ سے اسے بطلیموس ثانی کہا جاتا ہے۔ ابن الہیشم کی تصانیف کی تعداد دو سو سے اوپر ہے۔ ان میں سے ”المناظر“ سب سے زیادہ مشہور ہے جس میں انہوں نے روشنی کی حقیقت پر سب سے پہلے صحیح خطوط پر کام کیا۔ مثلا ً یہ کہ چیزیں اس لیے نظر آتی ہیں کہ ان کا عکس آنکھوں کے پردے شبکیہ پر پڑتا ہے۔ روشنی جس زاویہ سے آرہی ہو کسی آئینے سے ٹکرا کر دوسری طرف اسی زاویے پر منعکس ہوجاتی ہے۔
آپ کے نزدیک شفق کی ابتداءاور انتہاءاس وقت ہوتی ہے جب سورج افق سے 19 درجے نیچے ہو۔ یہ اس عظیم سائنس دان کا کارنامہ ہے کہ روشنی کے متعلق جو نظریات اس نے پیش کیے وہ کم و بیش آج بھی صحیح مانے جاتے ہیں اور یہ آپ ہی نے بتایا کہ اشیاءپر جو روشنی پڑتی ہے وہ تین طرح کی ہیں۔ ایک شفاف، غیر شفاف اور نیم شفاف۔
علوم و فنون کی دنیا میں اس مسلمان سائنس دان نے اپنا لوہا منوایا اور بیش بہا نظریات اور قیمتی ایجادات سے اپنی دنیا کے سائنس دانوں کو مالا مال کردیا۔
اور 1025ءمیں اس فانی دنیا سے ہمیشہ کے لیے چلاگیا۔

 
Next   پچھلا

Bookmark and Share
 
 
Close