Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
نظمیں > مزاحیہ
بلی کا روزہ
بچارا بے قصور
بچ بچا کے
ہم فیل ہوگئے
چار مسافر
شریر ٹونی
یاد ہے
بھائی بھلکڑ
بلو کی مرغی
ٹوٹ بٹوٹ
مینا موری
ایک انوکھی...
حلوہ
ایک مزاحیہ...
بہت سے بچوں...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

نظمیں

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

ٹوٹ بٹوٹ

 
  صوفی غلام مصطفیٰ تبسم  
 
ایک تھا لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ
باپ تھا اس کا میر سلوٹ

پیتا تھا وہ  سوڈا  واٹر
کھاتا تھا بادام اخروٹ

ایک تھا  لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ

ہر اک اس کی چیز ادھوری
کبھی نہ کرتا بات  وہ پوری

ہنڈیا کو کہتا تھا  ہنڈی
لوٹے کو کہتا تھا لوٹ

ایک  تھا  لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ

امی   بولی    بیٹا     آئو
شہر سے جا کر لڈو لائو

سنتے ہی وہ  لے   کر   نکلا
جیب میں ایک روپے کا نوٹ

ایک  تھا  لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ

اتنا اس  کا  جی   للچایا
رستے ہی میں کھاتا آیا

کھاتے      کھاتے   آئی   ہچکی
دانت میں اس کے لگ گئی چوٹ

ایک  تھا  لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ

بھائی اسے اٹھانے آیا
اب گلے   لگانے  آیا

امی اس  کی  روتی  آئی
ہائے  میرا  ٹوٹ   بٹوٹ

ایک  تھا  لڑکا  ٹوٹ  بٹوٹ
 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close