Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
شخصیات > دیگر مسلم شخصیات
عبدالرحمن...
عمر بن...
مامون الرشید
سلطان محمود...
طارق بن زیاد
مولانا محمد...
قائد اعظم...
سلطان محمد...
غالب
امام غزالی
صلاح الدین...
ششیر شاہ سوری
سید احمد خاں
شیخ سعدی
مولانا روم
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

شخصیات

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

امام غزالی

 
   
 
امام غزالی نامور ترین علماء و معلمین اخلاق و تصوف میں شمار ہوتے ہیں اور مغرب کے فلسفی بھی ان کی بالغ نظری اور علم و وجدان کے قائل ہیں۔ ان کی کتابوں کے ترجمے تمام یورپی زبانوں میں کیے جاچکے ہیں۔
محمد بن محمد ابو حامد الغزالی 1058 میں بمقام طوس میں پیدا ہوئے۔ طوس، جرجان اور نیشاپور میں تعلیم پائی اور بہت جلد ان کے علم و فضل کا شہرہ آس پاس کے ملکوں میں پھیل گیا۔ 1091 میں مشہور وزیر نظام الملک نے غزالی کو بغداد میں اپنے مشہور مدرسہ نظامیہ کا معلم مقرر کیا۔ بغداد میں امام غزالی درس و تدریس اور وعظ و ارشاد میں مصروف رہے۔
اسی دوران میں ان کو صوفیہ اور اہل طریقت کی صحبت حاصل ہوئی اور ان کا یہ یقین حق الیقین کے درجے تک پہنچ گیا کہ حقیقت کے معلوم کرنے کے لیے عقل کافی نہیں بلکہ وجدان ہی سب سے بڑا ذریعہ علم ہے۔
امام غزالی رحمتہ اللہ علیہ کی تصانیف کی تعداد 69 بتائی جاتی ہے۔ نیشاپور کے مدرسے میں تقرر کے تھوڑے عرصے بعد امام غزالی طوس گئے اور دسمبر ۱۱۱۱ ء میں وہیں ان کا انتقال ہوگیا۔

 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close