Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
مضامین > اسلامی
خطبہ حجتہ...
مکہ مکرمہ
اسم محمد کا...
فرعون کی ممی
کتنے مہربان...
قرآن کریم کا...
عورتوں پر...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

مضامین

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

اسم محمد کا ہرحرف بامعنی ہے

 
   
 
الفاظ کا مجموعہ حروف ہوتے ہیں۔ اگر ان میں سے کسی ایک حرف کو حذف کردیا جائے تو بقیہ حروف اپنے معنی کھوبیٹھتے ہیں،مثلاًطاہر ایک بامعنی لفظ ہے اور ط، الف، ہ، ر، کا مجموعہ ہے۔ اگر ان حروف میں سے پہلے حرف ط کو حذف کردیا جائے تو بقیہ حروف اہر بے معنی ہو کر رہ جاتے ہیں۔
اس طرح لفظ محمد (صلی اللہ علیہ وسلم) کا ہر حرف بھی بامقصد اور بامعنی ہے، مثلاً اگر شروع میں میم ہٹادیا جائے تو حمد رہ جاتا ہے جس کامفہوم تعریف و توصیف ہے، اور اگر ح کو مزید ہٹادیا جائے تو ممد رہ جاتا ہے یعنی مدد کرنے والا اورابتدائی میم کو اگر حذف کردیا جائے تو باقی مد رہ جاتا ہے جس کا مطلب ہے دراز اور بلند۔ یہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی عظمت و رفعت کی طرف اشارہ ہے اور اگر دوسرے میم کو بھی ہٹالیا جائے تو صرف د (دال) رہ جاتا ہے جس کا مفہوم ہے دلالت کرنے والا، یعنی اسم محمد اللہ کی واحدنیت پر دال ہے۔
 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close