Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
مضامین > اسلامی
خطبہ حجتہ...
مکہ مکرمہ
اسم محمد کا...
فرعون کی ممی
کتنے مہربان...
قرآن کریم کا...
عورتوں پر...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

مضامین

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

فرعون کی ممی

 
   
 
بادشاہ فرعون کا تعلق انیسویں شاہی دور 1290ق م سے تھا، اسی دور میں حضرت موسیٰ علیہ السلام پر وحی نازل ہوئی اور ان کو فرعون کے ظلم سے مظلوم غلاموں کو چھڑوانے کا حکم دیا گیا۔ مگر فرعون اپنے ظلم سے باز نہ آیا۔ آخر کار ایک روز جب حضرت موسیٰ علیہ السلام اپنی قوم کو لے کر جارہے تھے تو فرعون نے ان کا تعقب کیا، حضرت موسیٰ علیہ السلام کے راستے میں دریائے نیل آگیا اور خدا نے اس کو دو حصوں میں تقسیم کردیا اور حضرت موسیٰ علیہ السلام کی قوم اس راستے میں سے گزر گئی اور جب فرعون اور اس کی فوج نے اس راستے سے گزرنے کی کوشش کی تو دریائے نیل کا راستہ بند ہوگیا اور فرعون اور اس کی فوج اس میں غرق ہوگئی۔
فرعون کی لاش ایک نصیحت بن گئی اور اس کی لاش کو نہ پانی اور نہ ہی زمین نے قبول کیا اور یہ لاش دنیا کے لیے خدا کے عذاب کی نشانی بن کر صدیوں سے آج بھی موجود ہے۔
 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close