Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player

صفحہ اول
لائبریری
مضامین > معلوماتی
شہاب ثاقب
انوکھے درخت
دریائے نیل
شارک
طویل و مختصر...
لو سے بچنے کے...
سنہری...
شتر مرغ۔ سب...
پیاز کے عرق...
کھیدا
دریائے...
فیئری میڈوز
تاریخ لاہور...
راکا پوشی
ریڈیو۔۔۔ ایک...
دعا
سرگرمیاں
انکل شائن
رسالہ
کیا آپ جانتے ہیں ؟
گیمز
تازہ ترین خبریں
 

مضامین

 
   

 

 

 
Bookmark and Share

Next   Back
 

طویل و مختصر ترین جنگیں

 
   
 
دو ملکوں کے درمیان دنیا کی معلوم تاریخ کی مختصر ترین جنگ برطانیہ اور زنجبار کے مابین لڑی گئی۔ ستائیس اگست اٹھارہ سو چھیانوے کو صبح نو بجے اس جنگ کا آغاز ہوا تھا اور اسی صبح نو بج کر پچیس منٹ پر یہ جنگ ختم ہوگئی تھی، زنجبار کا علاقہ آج کل اسلامی ملک تنزانیہ میں ہے جو کہ براعظم افریقا میں واقع ہے، اس مختصر سی جنگ میں انگریزوں کو فتح ملی، برطانیہ کو فتح سے ہمکنار کرنے میں صرف تین جنگی بحری جہازوں نے اہم کردار ادا کیا تھا، زنجبار کا ساحلی شہر سمندری راستوں میں تجارت کے لیے اہم بندر گاہ ہے، یہ خوبصورت شہر تنزانیہ کے مسلمانوں نے اپنے ملک کی آزادی کے لیے جدوجہد کا آغاز کیا تو اسی شہر سے ابتداءکی۔ اس کے علاوہ سوا گھنٹے کی مختصر جنگ موصل کے بادشاہ نورالدین زنگی کے سالار اسد الدین شیر کوہ نے بھی لڑی ہے، اس جنگ میں اس نے فاطمہ خلافت کی باغی مصری فوج اور یروشلم کے بادشاہ اموری کی صلیبی فوج کو مشترکہ شکست دی تھی، جب کہ تاریخ کی طویل ترین جنگ موجودہ دور میں افغانستان میں طالبان اور اتحادی افواج کے مابین لڑی جارہی ہے، دیکھتے ہیں کہ اس کا کیا انجام ہوتا ہے۔
اس سے پہلے یہ اعزاز ایران و عراق کو حاصل تھا جن کے درمیان انیس سو اسی میں شروع ہونے والی جنگیں آٹھ سال تک چلیں۔
 
Next   Back

Bookmark and Share
 
 
Close